Eid Ki namaz ka Tarika

Eid ki Namaz ka Tarika

 

Eid ki Namaz ka Tarika

 

عید الفطر اور عید الاضحیٰ دونوں ہی اسلام کے مختلف مواقع پر منائے جانے والے تہوار ہیں۔ ان دونوں تہواروں پر مسلمانوں کا عموماً نماز عید ادا کرنا ہوتا ہے۔ یہ نماز کسی بھی مسجد یا عیدگاہ میں جماعت کے ساتھ ادا کی جاتی ہے۔ یہاں ہم آپ کو عید کی نماز کا طریقہ بتائیں گے۔

نیت

 

سب سے پہلے تو نیت کرنی ہوتی ہے۔ نیت دل سے ہوتی ہے، زبان سے کہنا ضروری نہیں۔ آپ کو بس یہ سوچنا ہوتا ہے کہ آپ عید کی نماز ادا کرنے جا رہے ہیں۔

 

تکبیر تحریمہ

 

نماز شروع کرنے سے پہلے ہم اللہ کی طرف اپنے ہاتھ اٹھا کر تکبیر کہتے ہیں۔ یہ تکبیر تحریمہ کہلاتی ہے۔ اس کے بعد ہم اپنے دونوں ہاتھ باندھ لیتے ہیں۔

قیام

 

قیام میں ہم سورہ فاتحہ پڑھتے ہیں۔ سورہ فاتحہ کے بعد کوئی بھی سورہ پڑھ سکتے ہیں۔

 

رکوع اور سجود

 

سورہ پڑھنے کے بعد ہم رکوع میں چلے جاتے ہیں۔ رکوع سے اٹھنے کے بعد ہم دو سجدے کرتے ہیں۔ یہ ایک رکعت ہوتی ہے۔

 

دوسری رکعت

 

دوسری رکعت میں بھی ہم وہی کرتے ہیں جو پہلی رکعت میں کیا۔ لیکن عید کی نماز میں ایک خاص بات یہ ہوتی ہے کہ پہلی رکعت میں 7 اور دوسری رکعت میں 5 اضافی تکبیریں ہوتی ہیں۔ یہ تکبیریں امام کے کہنے پر ہوتی ہیں۔

 

خطبہ

 

عید کی نماز کے بعد امام خطبہ دیتے ہیں۔ یہ خطبہ سننا سب کے لیے ضروری ہوتا ہے۔

 

دعا

 

خطبہ کے بعد دعا کی جاتی ہے۔ دعا میں ہم اللہ سے اپنی ضروریات کے لیے مانگتے ہیں۔

یہ تھا عید کی نماز کا طریقہ۔ یہ طریقہ دونوں عید کی نماز کے لیے یکساں ہوتا ہے۔ لیکن یہ یاد رکھنا ضروری ہے کہ عید کی نماز فرض نہیں، سنت ہے۔ لیکن اس کا یہ مطلب نہیں کہ ہم اس نماز کو ادا نہ کریں۔ عید کی نماز ادا کرنے سے ہمیں ثواب ملتا ہے اور اللہ ہماری دعاؤں کو قبول فرماتا ہے۔

 

English

 

 

Eid Al-Fitr And Eid Al-Adha Are Both Important Islamic Festivals Celebrated At Different Occasions. On Both Of These Occasions, Muslims Usually Perform The Eid Prayer. This Prayer Is Offered In Congregation At Any Mosque Or Eid Prayer Ground. Here, We Will Explain The Procedure For Performing The Eid Prayer.

 

Intention (Niyah)

 

First And Foremost, You Need To Make The Intention In Your Heart. It Is Not Necessary To Verbalize The Intention; You Just Need To Think That You Are Going To Perform The Eid Prayer.

 

Takbeer Tahrima

 

Before Starting The Prayer, We Raise Our Hands And Say The Takbeer, Which Is Called Takbeer Tahrima. After That, We Fold Our Hands.

 

Standing (Qiyam)

 

During The Standing Position, We Recite Surah Al-Fatiha. After Surah Al-Fatiha, Any Other Chapter From The Quran Can Be Recited.

 

Bowing (Rukoo) And Prostration (Sujood)

 

After Reciting The Chapter, We Move Into The Bowing Position (Rukoo). After Rising From Rukoo, We Perform Two Prostrations (Sujood). This Completes One Unit (Rak’ah) Of The Prayer.

 

Second Unit (Rak’ah)

 

In The Second Unit, We Repeat The Same Actions As The First Unit. However, In The Eid Prayer, There Is A Specific Addition. In The First Unit, The Imam Will Recite Seven Additional Takbeers, And In The Second Unit, Five Additional Takbeers. These Takbeers Are Performed Upon The Instruction Of The Imam.

 

Sermon (Khutbah)

 

After The Eid Prayer, The Imam Delivers A Sermon (Khutbah). It Is Important For Everyone To Listen To The Sermon.

 

 

Supplication (Dua)

 

After The Sermon, A Supplication (Dua) Is Made. In This Supplication, We Ask Allah For Our Needs And Desires.

 

This Is The Procedure For Performing The Eid Prayer. The Procedure Remains The Same For Both Eid Al-Fitr And Eid Al-Adha. However, It Is Important To Remember That The Eid Prayer Is Not Obligatory (Fard), But It Is A Recommended (Sunnah) Practice. Nonetheless, This Does Not Mean That We Should Neglect This Prayer. By Performing The Eid Prayer, We Earn Rewards, And Allah Accepts Our Supplications.

I've been a professional blogger and content writer since 2020. I've worked on over 25 different blogs and currently lead Team Mentor. If you want to know more about me, click on the three dots